پیر‬‮   15   اکتوبر‬‮   2018

لودھراں جیت‘ احتساب کے نام پر انتقام کا عوامی جواب جس نے آئین توڑا‘ ججز کو گرفتار کیا اس پر ہاتھ ڈالتے ہوئے ان کے پر جلتے ہیں؟ نواز شریف

لودھراں کا الیکشن جھوٹے مقدمات کا جواب ہے، ان کے خلاف مقدمات اور سازشوں کا جواب عوام دے رہے ہیں،سلام پیش کرتاہوں۔ اللہ تعالیٰ نے عوام کی عدالت میں سرخرو کیا اور عوامی عدالت نے فیصلہ دیا کہ اس وقت اہل کون ہے اور نااہل کون ؟ میرے خلاف فیصلہ دینے والے عوامی عدالت کا فیصلہ دیکھ لیں کیونکہ عوام خود ہی ناانصافیوں کا انصاف کررہی ہے، دہرے معیار کہاں تک چلیں گے۔پہلے ریفرنسز میں کچھ نہیں نکل رہا اس لئے مجھے سزاد دلوانیکے لئے ضمنی ریفرنزنس تیار کئے جارہے ہیں ،پہلے ریفرنسز میں جان ہوتی یا کوئی ثبوت اور سچائی ہوتی تو ضمنی ریفرنسز کی ضرورت ہی نہ پڑتی ۔آج سارا زور ہم پر ہی ہے اور سب سے بڑے مجرم ہم بنے ہوئے ہیں، ڈرتا نہیں، انتقام کا سامنا کر رہا ہوں۔ جس نے دوبار ملک کا آئین توڑا اور ججز کو گرفتار کیا اس پر ہاتھ ڈالتے ہوئے ان کے پر جلتے ہیں؟ ۔ سابق وزیراعظم کا کہنا تھا پاکستان کی معیشت کو عروج پر پہنچایا، ملک سے لوڈشیڈنگ اور دہشت گردی کا خاتمہ کیا۔ تفصیلات کے مطابق اسلام آباد کی احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ میرا مقدمہ پاکستان کے عوام لڑرہے ہیں، احتساب کے نام پر ہم سے انتقام لیا جارہا ہے لیکن عوام کا ردعمل عیاں ہے جو ہمارے خلاف جھوٹے مقدمات و سازشوں کا جواب دے رہے ہیں اور ووٹ کے تقدس کی مثالیں بھی قائم کر رہے ہیں۔ نواز شریف کا کہنا تھا کہ پاکستان کی خدمت کرنے والوں سے انتقام لیا جا رہا ہے اور ان کے خلاف سارا زور لگایا جارہا ہے، جنہوں نے نیب سے ریفرنسز بنوائے ہیں وہ چاہتے ہیں کہ نواز شریف کو کسی نہ کسی طرح سزا ہوجائے، مجھے سزا دینے کے لیے ضمنی ریفرنس تیار کئے جارہے ہیں، حالانکہ موجودہ ریفرنس میں جان ہوتی یا کوئی ثبوت اور سچائی ہوتی تو ضمنی ریفرنس کی ضرورت ہی نہ ہوتی، ان ریفرنسز میں کچھ نہیں۔ سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ مجھے نہیں معلوم کس بات کا انتقام لیا جارہا ہے، لیکن لودھراں کا الیکشن جھوٹے مقدمات کا جواب ہے، ہم سے انتقام لینے والوں سے عوام نے لودھراں میں انتقام لیا، کسی نئے میثاق جمہوریت کی ضرورت نہیں، پہلے والے چارٹر پر ہی عمل ہوجائے تو سب ٹھیک ہوجائے گا، جنہوں نے آئین توڑا اور ججز کو گرفتار کیا ان کو کوئی نہیں پوچھتا جس نے دوبار ملک کا آئین توڑا اور ججز کو گرفتار کیا اس پر ہاتھ ڈالتے ہوئے ان کے پر جلتے ہیں؟ دہرے معیار کہاں تک چلیں گے۔ دریں اثناء پنجاب ہاؤس میں مشاورتی اجلاس میں مریم نواز ،وزیر مملکت برائے داخلہ طلال چوہدری ،وفاقی وزیر کیڈ طارق فضل چوہدری ،سینٹر پرویز رشید ،امیر مقام طارق فاطمی ،بلیغ الرحمان، مصدق ملک، دانیال عزیز اور طاہرہ اورنگزیب سمیت دیگر رہنماؤں نے شرکت کی اجلاس میں نواز شریف کو رہنماؤں کی جانب سے لودھراں الیکشن میں کامیابی پر مبارکباد پیش کی جس پر سابق وزیر اعظم نواز شریف نے اللہ کا شکر ادا کرتے ہوئے کہا کہ اس نے عوام کی عدالت میں سرخرو کیا اور عوامی عدالت نے فیصلہ دیا کہ اس وقت اہل اور نااہل کون ہیں میرے خلاف فیصلہ دینے والے عوامی عدالت کا فیصلہ دیکھ لیں کیونکہ عوام خود ہی ناانصافیوں کا انصاف کررہی ہے انہوں نے کہا کہ اب تمام ہونے والی سازشوں کا جواب عوامی عدالت سے آرہا ہے اور عوام نے بھی تعمیری اور تخریبی ایجنڈوں میں فرق واضح کردیا ہے اور تمام تر الزامات اورلوازمات کے باوجود بھی لاڈلے کو عوامی عدالت میں مسترد کردیا گیا ہے اس طرح مسلم لیگ ن بڑھتے ہوئے گراف کیساتھ 2018 کے الیکشن میں اکثریتی کامیابی حاصل کریگی اور سازشیوں کی تمام سازشیں دھری کی دھری رہ جائیگی اسکے علاوہ اجلاس میں سینٹ انتخابات سمیت چیئرمین سینٹ کے نام پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا اور نواز شریف کی جانب رہنماؤں کو آئندہ الیکشن 2018 میں کامیابی کیلئے عوامی رابطہ مہم تیز کرنے کی بھی ہدایت کی ۔
نوازشریف

 
 
 
 
Back to Conversion Tool

 


© Copyright 2018. All right Reserved