منگل‬‮   14   اگست‬‮   2018

متحدہ رہنماء سلمان بلوچ پر خاتون سے زیادتی اوربلیک میلنگ کاالزام

کراچی (سٹاف رپورٹر) متحدہ پاکستان کے رکن قومی اسمبلی سلمان مجاہد بلوچ کیخلاف خاتون نے زیادتی اور بلیک میلنگ کا الزام عائد کرتے ہوئے رپورٹ درج کرا دی، پی ٹی آئی کارکنکو اسلحہ دکھانے اور زدوکوب کرنے کیخلاف بھی مقدمہ درج، وزیر داخلہ نے سلمان بلوچ کی سیکورٹی واپس لے کر واقعات کی تحقیقات کا حکم دیدیا۔ تفصیلات کے مطابق علینہ خان نامی خاتون نے کہا ہے کہ سلمان مجاہد بلوچ پہلی بار مجھے اور میری والدہ کو جناح گراؤنڈ میں ملے اور میری والدہ سے بہن کا رشتہ قائم کیا اور مجھے ایک بھانجی کی حیثیت سے سر پر ہاتھ رکھا اور نوکری دلانے کے بہانے مجھے اسلام آباد لے کر جانے لگے۔ انہوں نے مجھے پہلی بار 12 اگست 2014 کو پارلیمنٹ لاجز اسلام آباد میں زیادتی کا نشانہ بنایا اور خفیہ کیمرے سے ان کی ویڈیو بھی بنائی۔ گلشن اقبال تھانے میں خاتون نے درخواست میں موقف اختیار کیا کہ سلمان مجاہد بلوچ نے شادی کا وعدہ کر کے مجھے خاموش رہنے کا کہا لیکن جب میں نے ان پر زور دیا تو انہوں نے بھائی کو اغوا کیا اور اسے الٹا لٹکا کر تشدد کا نشانہ بھی بنایا۔ میں نے تنگ آکر شادی بھی کر لی لیکن اب یہ میرے شوہر کو بھی طلاق دینے کیلئے دھمکیاں دے رہے ہیں۔ علینہ نے یہ الزام بھی عائد کیا کہ سلمان مجاہد بلوچ ویڈیوز کے عوض 40 لاکھ روپے کا تقاضا کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر مجھے کسی قسم کا جانی و مالی نقصان ہوا تو اس کے ذمہ دار سلمان مجاہد بلوچ ہوں گے۔ علاوہ ازیں سلمان مجاہد کی جانب سے پی ٹی آئی کارکن کو اسلحہ دکھانے اور زدوکوب کرنے کے خلاف بھی مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔ متحدہ رہنما نے ڈیفنس فیز ٹو میں گاڑی نہ ہٹانے پر احسن علوی کو بندوق لہرا کر دھمکایا تھا اور ان کیخلاف برے الفاظ استعمال کرتے ہوئے دھمکیاں بھی دی تھیں جبکہ ان کے محافظوں نے بھی شہری پر بندوقیں تان لی تھیں۔ احسن نے جب تمام واقعہ سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کیا تو پارٹی رہنما حرکت میں آگئے اور عمران اسماعیل نے اپنی مدعیت میں سلمان مجاہد کیخلاف گزری تھانے میں مقدمہ درج کرا دیا۔ ایس ایس پی انویسٹی گیشن ساؤتھ فاروق اعوان کے مطابق واقعہ کی تحقیقات شروع کردی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ احسن علوی اور سلمان مجاہد بلوچ سے بیانات لیے جائیں گے جبکہ ان کی گاڑی کی تفصیلات بھی پولیس نے حاصل کرلی ہیں جو متحدہ رہنما کی بیگم شازیہ سلمان کے نام پر رجسٹرڈ ہے۔ ان واقعات کے بعد صوبائی وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال نے سلمان بلوچ سے سیکورٹی واپس لے کر ان کیخلاف تحقیقات کا حکم دیدیا ہے۔


loading...
© Copyright 2018. All right Reserved