اتوار‬‮   18   فروری‬‮   2018

کوئٹہ پھردہشتگردی کے نشانے پر،4ایف سی اہلکار شہید

لانگو آباد کے علاقے میں ریلوے لائن پر تعینات اہلکاروں پر دہشتگردوں نے فائرنگ کی، شہداء میں اسلم، سعید ، شبیر اور امجد شامل 
دہشت گرد حملوں سے حوصلے پست نہیں ہوں گے، صدر ،و زیراعظم اوردیگر کی جانب سے مذمت، جانی نقصان پر افسوس کااظہا ر 

کوئٹہ( نیو زایجنسی )کوئٹہ میں نامعلوم مسلح افراد کی فائرنگ سے فرنٹیئر کور بلوچستان کے4 اہلکار شہید ہو گئے ،شہید اہلکار علاقے سے گزرنے والے ریلوے لائن کے چیکنگ پر تعینات تھے۔ تفصیلات کے مطابق کوئٹہ کے علاقے لانگو آباد کے قریب نامعلوم مسلح افراد نے فائرنگ کر کے گشت کرنے والے دو موٹرسائیکلوں پر ایف سی کے چار نوجوانوں کو نشانہ بنایا اور چاروں اہلکار لانس نائیکاسلم،نائیک محمد سعید ،لانس نائیک شبیر،سپاہی امجدموقع پر شہید ہو گئے ۔واقع کی اطلاع ملتے ہی آئی جی پولیس اور ایف سی کی اعلیٰ حکام جائے وقوع پر پہنچے جبکہ وزیراعلیٰ بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو اور وزیر داخلہ میر سرفراز بگٹی بھی موقع پر پہنچے اور جگہ کا معائنہ کیا پٹرولنگ کرنے والے فرنٹیئر کور کے اہلکار لانگو آباد کے قریب علاقے سے گزرنے والے ریلوے ٹرین کی چیکنگ پر تعینات تھے۔ آئی جی پولیس معظم جاہ انصاری نے صحافیوں کو بتایا کہ بدھ کو کوئٹہ ریلوے اسٹیشن کے قریب مینگل آباد کے علاقے میں صبح آٹھ بجے کے قریب مسلح افراد نے دو موٹر سائیکلوں پر سوار ایف سی یعنی فرنٹیئر کور کے چار اہلکاروں پر فائرنگ کر دی۔ا نہوں نے بتایا کہ فائرنگ کے نتیجے میں چاروں اہلکار شہید گئے۔ علاقے میں شدت پسندوں کی جانب سے ریلوے ٹریک پر دھماکہ خیز مواد نصب کرنے کے خدشات کے پیش نظر ٹریک کو روزانہ کی بنیاد پر چیک کیا جاتا ہے۔صدر ووزیراعظم، وزیرداخلہ اوردیگرسیاسی رہنماؤں نے حملے کی مذمت کرتے ہوئے قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کیا ہے اورکہاہے کہ دہشتگرد حملوں سے ہمارے حوصلے پست نہیں ہوں گے، دہشتگردوں کیخلاف کارروائیاں جاری رہیں گی۔ 

© Copyright 2018. All right Reserved