منگل‬‮   14   اگست‬‮   2018

حکومت اور اپوزیشن نے نگران وزیر اعظم کے نام کو حتمی شکل دیدی


؂اسلام آباد (تجزیہ :عمر حیات خان )حکومت اور اپوزیشن کی جانب سے نگران وزیر اعظم کے نام کو حتمی شکل دیدی گئی ہے ، نگران وزیر اعظم کا اعلان قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ 18مئی تک کریں گے ، حکومتی مدت 31مئی کو ختم ہورہی ہے ، حکومتی مدت کے اختتام سے قبل نگران کابینہ کا قیام بھی عمل میں لایا جائے گا ۔چہ میگوئیاں کی جارہی ہیں کہ اقوام متحدہ میں پاکستان کی خصوصی مندوب ملیحہ لودھی نگران وزیر اعظم کی مضبوط امیدوار کے طور پر سامنے آرہی ہیں ، سابق گورنر سٹیٹ بینک ڈاکٹر عشرت حسین اس دوڑ میں پیچھے رہ گئے ہیں ۔ نگران وزیر اعظم کی نامزدگی میں حکومت اور اپوزیشن کو سوچ سمجھ کر کرنا ہوگا ،جس کا 2018کے عام انتخابات کو منعقد کروانے میں اہم کردار ہوگا ،جو کسی بھی قسم کے دباؤ کو قبول نہ کرے ، ملک میں جمہوریت کے تسلسل کیلئے سیاسی جماعتوں جمہوری طریقے سے انتخابات کے عمل سے گزرنا ہوگا ۔ ووٹ کا تقدس اور عزت تبھی بحال ہوگی جب کسی جمہوریت پسند کو نگران وزیر اعظم بنایا جائے گا۔ ایسی شخصیت کو نگران وزیر اعظم بنایا جائے جو داخلہ اور خارجہ پالیسی سمیت عوام کی بنیادی ضروریات کا ادراک رکھتا ہو ، کہیں ایسا نہ ہو کہ پیرا شوٹ کے ذریعے آنے والا نگران وزیر اعظم جمہوری عمل کو سبوتاژ کرے اور سیاسی جماعتیں ہاتھ ملتی رہ جائیں ۔اگرچہ ہمیں ماضی میں ایسی مثالیں نہیں ملتیں مگر اب حالات قدرے مختلف ہیں ، پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے کی وجہ سے پوری دنیا کی نظریں پاکستان پر ہیں ،ملک کو بیرونی خطرات کا بھی سامنا ہے جس کی طرف سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان بارہا اشارہ کر چکے ہیں ۔ ایسے وقت میں مضبوط اعصاب کی مالک شخصیت کو پاکستان کا نگران وزیر اعظم ہونا چاہیے۔ 
حتمی شکل


loading...
© Copyright 2018. All right Reserved