جمعہ‬‮   19   اکتوبر‬‮   2018

فلسطینی شہداء کی تدفین،او آئی سی کا ہنگامی اجلاس طلب،پاکستان کا 16مئی کو یوم سوگ منانے کا اعلان




غزہ، انقرہ ،اسلام آباد ( مانیٹرنگ ڈیسک ، نیوز ایجنسیاں) فلسطینی شہداء کی تدفین ،او آئی سی کا ہنگامی اجلاس طلب،پاکستان کا 18 مئی یوم سوگ منانے کا اعلان ،فلسطین میں صیہونی فوج کے ہاتھوں شہید ہونے والوں کی تدفین کے موقع پر فضا انتہائی سوگوار اور ہر آنکھ اشک بار ،یوم سقوط فلسطین کے حوالے سی مکمل ہڑتال ہے،منگل کا روز جنازوں کا دن ہے،شہدا کے لہو کو رائیگاں نہیں جانے دیا جائے گا۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق مقبوضہ فلسطین میں گزشتہ روز صیہونی بربریت کا شکار ہوکر شہید ہونے والے فلسطینیوں کو سپرد خاک کیا گیا جب کہ مقبوضہ علاقے میں اس قتل و غارت کے خلاف 3 روزہ سوگ منایا گیا ۔فلسطین میں یوم سقوط فلسطین کے حوالے سے صدر محمد عباس کی اپیل پر ہڑتال کی رہی اس موقع پر سوگ کا سا سماں ہے اور ہر آنکھ اشک بار ہے۔ فلسطین کے صدر نے تین روزہ سوگ کا بھی اعلان کیا ہے۔غزہ سرحد پر گزشتہ کئی ہفتوں سے جاری ہفتہ وار مظاہروں کا انتظام کرنے والی کمیٹی کے سربراہ خالد باتش کا کہنا ہے کہ منگل کا روز جنازوں کا دن ہے، ہم اپنے شہدا کو سپرد خاک اور شہدا کے لہو کو رائیگاں نہیں جانے دینے کے عزم کا عہد کررہے ہیں چنانچہ 15 مئی کو غزہ کی سرحد پر مظاہرے نہیں ہوں گے۔دوسری جانب امریکا نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں مستقل رکن ہونے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے اسرائیلی فوج کے اقدامات کی آزادانہ تحقیق کرانے کے قرارداد ویٹو کر دی ہے۔ وائٹ ہاس کے ترجمان راج شاہ نے حماس کو فلسطینیوں کے قتل کا ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے کہا کہ اسرائیل کے پاس اپنے دفاع کا پورا حق ہے ادھرترکی کے وزیراعظم بن علی یلدرم نے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو ٹیلی فون کیا اور ترکی میں او آئی سی کے غیر معمولی اجلاس میں شرکت کی دعوت دی، وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے قابض اسرائیلی فوج کی کارروائیوں کی مذمت کی اور فلسطینیوں کی پر امن جدوجہد کی حمایت کے عزم کا اعادہ کیا۔منگل کو ترکی کے وزیراعظم بن علی یلدرم نے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو ٹیلی فون کیا اور ترکی میں او آئی سی کے غیر معمولی اجلاس میں شرکت کی دعوت دی ۔او آئی سی کا غیر معمولی اجلاس 18مئی کو منعقد ہوگا ۔وزیراعظم شاہد خاقان عباسی او آئی سی کے غیر معمولی اجلاس میں شرکت کریں گے ۔اجلاس میں اسرائیلی فوج کے ہاتھوں فلسطینیوں کے قتل عام سے پیدا ہونے والی صورتحال پر غور کیا جائے گا ۔ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے قابض اسرائیلی فوج کی کارروائیوں کی مذمت کی اور فلسطینیوں کی پر امن جدوجہد کی حمایت کے عزم کا اعادہ کیا ۔ دریں اثنا غزہ میں شہادتوں پر عالمی برادری کا سخت ردعمل سامنے آگیا، ترکی اور جنوبی افریقہ نے اسرائیل سے اپنے سفیر احتجاجاً واپس بلا لیے۔سب سے پہلا عملی قدم ترکی اور جنوبی افریقہ نے اٹھایا، ترکی نے امریکا اور اسرائیل سے جبکہ جنوبی افریقہ نے تل ابیب سے اپنے سفیر واپس بلا لئے۔ پاکستان نے امریکی سفارتخانے کی منتقلی کو سلامتی کونسل کی قراردادوں کی خلاف ورزی قرار دے دیا۔ فلسطینی صدر محمود عباس نے کہا ہے اس اقدام سے مشرقِ وسطیٰ مزید عدم استحکام کا شکار ہوگا۔فرانس، روس، برطانیہ سمیت یورپی یونین نے اسرائیلی فوج کی جانب سے کی گئی جارحیت کی مذمت کی۔ آسٹریا کے دارالحکومت ویانا میں ایک پریس کانفرنس میں اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل ناتونیو گترش نے غزہ میں شہادتوں پر شدید تشویش کا اظہار کیا۔ اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کی تنظیم نے شہادتوں کی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے



ن شہداء تدفین



© Copyright 2018. All right Reserved