بدھ‬‮   12   دسمبر‬‮   2018

جامعہ پشاور میں پولیس تشدد خلاف آج صوبہ گیر احتجاج ہوگا، سہیل معبود


دو کالم ضروری
جامعہ پشاور میں پولیس تشدد خلاف آج صوبہ گیر احتجاج ہوگا، سہیل معبود
طلباء نے حقوق کے لئے پُر امن احتجاج کیا توپولیس نے انتظامیہ کے ایماء پر تشدد کیا
پشاور(بیورورپورٹ)متحدہ طلباہ محاذ کے جنرل سکرٹری سہیل معبود نے کہا ہے کہ جامعہ پشاور میں پولیس تشدد کرپشن اقرباء پروری کے خلاف آج بروز جمعرات صوبہ گیر احتجاج ہوگا جس کا باقاعدہ آغاز جامعہ پشاور سے کیا جائیگا جامعہ پشاور کے طلباء نے اپنے جائز اور آئینی حقوق کے لئے پُر امن احتجاج کیا تھا جس پر پولیس نے انتظامیہ کے ایماء پر بہیمانہ تشدد کیا تھا جوکہ افسوس ناک ہے تحریک انصاف نے تو خود126 دن درنہ دیا تھا لیکن اُن سے طلباء کا ایک گھنٹہ پُر امن احتجاج برداشت نہ ہوا۔ انہوں نے کہا کہ طلباء نے جامعہ پشاور کے انتظامیہ کی کرپشن مالی بدعنوانیوں اور فیسوں میں بے تحاشہ اضافے کو بے نقاب کیا تھا جس کی پاداش میں اُن پر پولیس کی جانب سے تشدد کیا گیا جامعہ پشاور کی انتظامیہ اُن طلباء کو راستے سے ہٹانہ چاہتی ہے جو اُن کی اقرباء پروری ، کرپشن اور دیگر غیر قانونی اقدامات کو بے نقاب کر رہے ہیں انہوں نے کہا کہ متحدہ طلباء محاذنے انتظامیہ کو پروسٹ سیف اللہ ، چیف پراکٹر ندیم اعظم، چیف سیکورٹی آفسر کرنل (ر) عزیر گل ، کمانڈنٹ طارق سہیل مروت ، ڈی ایس پی فضل ربی، کو ہٹانے کے لئے 48گھنٹے کی ڈیڈ لائن دی تھی لیکن انتظامیہ بدستور اپنے ہٹ درمی پر قائم ہے انہوں نے کہا کہ آج سے صوبے بھر میں بر پور احتجاج کیا جائے گا۔
سہیل معبود

© Copyright 2018. All right Reserved