بدھ‬‮   12   دسمبر‬‮   2018

ن لیگ اجلاس،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،پہلا انٹرو ،، جمزہ ،،،،


مریم جیل جا سکتی ہے تو علیمہ خان پر بھی انکوائری ہونی چاہیے ، اربوں غبن کر ک نے والے آج پارلیمنٹ میں بیٹھے ہوئے ہیں ، حمزہ شہباز
سردار ایاز صادق کے طلب کردہ پارلیمنٹ کے آج مشترکہ اجلاس میں ایم ایم اے اور اپوزیشن کی دیگر جماعتوں کو شرکت کی دعوت

لاہور اسلام آباد (نیوز ایجنسی مانیٹرنگ ڈیسک ) پنجاب اسمبلی کی گیٹ پر اپوزیشن کا اجلاس ، شہباز کی گرفتای کےخلاف احتجاج ، ن لیگ آج قومی اسمبلی کے باہر میدا بن لگاے گی ، پی پی کی حمایت ،تفصیل کے مبطابق قائد حزب اختلاف پنجاب حمزہ شہباز نے کہا ہے کہ عمران نیازی کے آئی ایم ایف کے پاس نہ جانے کے وعدے دھرے کے دھرے رہ گئے ، اسد عمر بھی آئی ایم ایف کے سامنے جھک گئے ، ایک دن میں ڈالر مہنگا ہونے سے ملک مزید قرضوں میں ڈوب گیا ہے ، جہانگیر ترین کو عدالت بھی جھوٹا ثابت کر چکی ہے ، عوام کو پتہ ہے کہ آپ جعلی وزیراعظم ہیں ، اگر، نوازشریف کے ساتھ مریم جیل جا سکتی ہے تو علیمہ خان پر بھی انکوائری ہونی چاہیے ، احتساب عدالت کے جج نے بھی تصدیق کی کہ نوازشریف پو کرئی کرپشن ثابت نہیں ہوسکی، شہباز شریف کو صاف پانی کیس میں بلا کر آشیانہ اسکینڈل میں گرفتار کر لیا ،عمران نیازی عوام سے کئے گئے وعدوں کو پورا کریں ، عوام آپ کے جھوٹ مزید نہیں سن سکتی ، جن کے پاس کچھ کرنے کیلئے نہیں ہوتا وہ صرف باتیں ہی کرتے ہیں ، اقتدار میں آکر اب ملکی صورتحال کو قابو کرنا آپ کی ذمہ داری ہے ۔وہ بدھ کو پنجاب اسمبلی کی گیٹ پر اپوزیشن کے احتجاجی مظاہرے سے خطاب کر رہے تھے ۔ حمزہ شہباز نے کہا کہ آج پاکستان میں صرف کہنے کو ہی جمہوریت ہے ، پارلیمنٹ پر گالیاں دینے اور لعنتیں بھیجنے والے عمران نیازی آج اسمبلی کو تالہ لگا کر بیٹھے ہوئے ہیں ، جو لوگ کنٹینر پر گالیاں دیتے تھے وہ آج پارلیمنٹ میں منتخب نشستوں پر بیٹھے ہوئے ہیں نوازشریف کے ساتھ مریم جیل جا سکتی ہے تو علیمہ خان پر بھی انکوائری ہونی چاہیے ، اربوں روپے غبن کر کے آج آپ کے لوگ پارلیمنٹ میں بیٹھے ہوئے ہیں۔حمزہ شہباز نے کہا کہ احتساب عدالت کے جج نے بھی تصدیق کی کہ نوازشریف پر کرئی کرپشن ثابت نہیں ہوسکی ، شہباز شریف نے نوازشریف کی قیادت میں اربوں کے منصوبے لگائے اور 2013میں کئے گئے سب وعدے پورے کئے ضمنی الیکشن سے پہلے آئی جی کو بدلنا اس میں کہیں میاں محمود الرشید معاملہ تو نہیں یا اس کے پیچھے کوئی اور مقصد تو نہیں جن کے پاس کچھ کرنے کو نہ ہو وہ صرف باتیں کرتے ہیں دریں اثنا سردار ایاز صادق کے طلب کردہ پارلیمنٹ کے آج مشترکہ اجلاس میں ایم ایم اے اور اپوزیشن کی دیگر جماعتوں کو شرکت کی دعوت اجلاس آ ج جمعرا ت ‘‘کی سہ پہر 3بجے پارلیمنٹ کے صدر دروازے پر طلب کر لیا ہے، جس میں قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف میاں شہباز شریف کی گرفتاری کے بعد قومی اسمبلی کا اجلاس فوری طور پر نہ بلانے پر شدید احتجاج کیا جائیگا، سردار ایاز صادق نے پیپلپزپارٹی، ایم ایم اے اور اپوزیشن کی دیگر جماعتوں کو شرکت کی دعوت دی ہے، جسے انہوں نے قبول کر لیا ہے، ذرائع کے مطابق سپیکر قومی اسمبلی نے17اکتوبر کو اجلاس طلب کرنے کا عندیہ دیا ہے، جسے اپوزیشن نے مسترد کرتے ہوئے14روز کی آئینی مدت ختم ہونے سے دو روز قبل اجلاس بلانے کے فیصلے کو تاخیری حربہ قرار دیا ہے، ذرائع کے مطابق مسلم لیگ ن کی اعلیٰ قیادت نے ایڈوائزری پارلیمانی کمیٹی قائم کر دی ہے جو اپوزیشن کی دیگر جماعتوں کی قیادت سے رابطے قائم کرے گی،8رکنی کمیٹی میں احسن اقبال، خواجہ آصف، رانا تنویر حسین، رانا ثناء اللہ، سردار ایاز صادق، مریم اورنگزیب، شازہ خواجہ عطا اللہ تارڑ شامل ہیں، تاجر برادری سے رابطوں کیلئے پرویز ملک سینیٹر شاہین بٹ، عابد شیر علی، مفتاح اسماعیل، میاں منان، چوہدری سیرباز بابر اور شیخ قیصر پر مشتمل کمیٹی بنائی گئی، وکلاء کی کمیٹی قائم گئی ہے، جس میں زاہد حامد، نصیر بھٹہ، رانا ثناء اللہ اعظم نذیر تارڑ اور عطا اللہ تارڑ شامل ہیں۔
حمزہ شہباز

© Copyright 2018. All right Reserved