پیر‬‮   15   اکتوبر‬‮   2018

نوازشریف کو کسی منصوبے کے تحت نہیں پھنسایا، تفتیشی افسر


نوازشریف کو کسی منصوبے کے تحت نہیں پھنسایا، تفتیشی افسر
ملزمان کے علاوہ اثاثوں کے دیگر بینیفشری لوگوں کو شامل تفتیش نہیں کیا، محبوب عالم
اسلام آباد (خبر نگار)احتساب عدالت اسلام آباد کے جج محمد ارشد ملک نے سابق وزیر اعظم میا ں محمد نواز شریف کے خلاف العزیزیہ سٹیل ملز ریفرنس کیس کی سماعت کی۔ نیب کے تفتیشی افسر محبوب عالم پر خواجہ حارث کی جرح چھٹے روز مکمل کر لی گئی۔ نیب شواہد مکمل ہونے سے متعلق حتمی بیان آج دے گا ۔ تفتیشی افسر نے جرح کے دوران بتایا یہ کہنا درست نہ ہو گا کہ انہوں نے آزادانہ تفتیش نہیں کی ۔میاں محمد نواز شریف کو کسی سوچے سمجھے منصوبے کے تحت کیس میں نہیں پھنسایا ، یا صرف جے آئی ٹی رپورٹ پر انحصار کیاتاہم یہ بات بھی درست ہے کہ ملزمان کے علاوہ اثاثوں کے دیگر بینیفشری لوگوں کو شامل تفتیش نہیں کیا۔ شریف خاندان کی کون سی کمپنیاں بند ہوچکی ہیں اور کون سی آپریشنل ہیں؟ اس حوالے سے تحقیقات نہیں کی۔ شریف خاندان کی کمپنیوں کے شیئرز کی تقسیم سے واقفیت رکھنے والے بھی کسی فرد کا بیان قلمبند نہیں کیا۔ تفتیشی افسر نے تسلیم کیا کہ چودھری شوگر ملز اور دیگر کمپنیوں کی مالیت اور خالص منافع سے متعلق ریکارڈ حاصل نہیں کیا ۔تفتیشی افسر نے کہا نواز شریف اور شہباز شریف نے جے آئی ٹی کو بتایا تھا کہ حسن، حسین اور حمزہ شہباز کو اخراجات دادا سے ملتے رہے ۔
تفتیشی افسر

© Copyright 2018. All right Reserved