پیر‬‮   15   اکتوبر‬‮   2018

پمز میں اصلاحات لانیکی تیاریاں، سربراہ ہیلتھ ٹاسک فورس کا دورہ

دو کالم،،،،،،،،، پمز میں اصلاحات لانیکی تیاریاں، سربراہ ہیلتھ ٹاسک فورس کا دورہ پمز میں بھرتیاں کنٹریکٹ پر کی جائیگی، کارکردگی کی بنیاد پر دو سال بعد توسیع دی جائیگی عامر کیانی نوشیروان برکی کے ہمراہ تھے،اصلاحات کی مخالفت کرینگے، ڈاکٹرز ایسوسی ایشن اسلام آباد ( ندیم چوہدری ) وزیر اعظم ہیلتھ ٹاسک فورس کے سربراہ پروفیسر نوشیروان برکی کا پاکستان انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز ( پمز) کا دورہ ،پمزمیں خیبر پختونخوا طرز پر اصلاحات لانے کی تیاریاں ،ایگزیکٹو ڈائریکٹر پمز راجہ امجد محمود نے ہیلتھ ٹاسک فورس کے سربراہ کو بریفنگ دی ،پروفیسر نوشروان برکی کے ہمراہ وفاقی وزیر قومی صحت بھی تھے جنہوں نے بعد میں کالج آف نرسنگ کا دورہ بھی کیا ، ذرائع وزارت قومی صحت کےمطابق ہیلتھ ٹاسک فورس کے سربراہ خیبر پختونخواکی طرز پر پمز میں اصلاحات لائیں گے جس کے بعد پمز میں نئی ہونیوالی تمام بھرتیاں کنٹریکٹ پر ہو نگی ، تمام ملازمین کو نکالنے اور رکھنے کے اختیارات گورننگ بورڈ کے پاس ہوں گے ، جب کہ آئندہ بھرتی کئے جانے والے ملازمین میں اکثریت کو سرکاری ملازمت نہیں ملے گی تمام ملازمین کو کارکردگی کی بنیاد پر رکھا جائے ، ہر دو سال بعد ملازمین کے کنٹریکٹ میں توسیع کی جائے گی جن ملازمین کی کاکردگی ٹھیک نہیں ہو گی ان کو نوکری سے فارغ کر دیا جائیگا ۔پمز کے دورہ کے بعد وزی اعظم ہیلتھ فورس کے سربراہ ڈاکٹر نوشیروان برکی نے وزارت قومی صحت میں ہیلتھ ٹاسک فورس کی میٹنگ کی بھی سربراہی کی گئی جس میں ملک بھر میں صحت کے شعبہ میں اصلاحات کیلئے لائحہ عمل پر غور کیا گیا ، ہسپتال میں بریفنگ کے دوران وفاقی وزیرصحت عامر محمود کیانی خاموشی سے ہیلتھ ٹاسک فورس کے سربراہ کے پہلو میں بیٹھے رہے ۔ پمز میں ممکنہ اصلاحات کے حوالے سے ’اوصاف‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے فیڈرل ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے صدر ڈاکٹر اسفند یار کا کہنا تھا کہ ہم پمز میں سرکاری ملازمین کی جگہ کنٹریکٹ ملازمین اور سول سرونٹ قوانین میں کسی بھی قسم کی تبدیلی کی بھرپور مخالفت کریں گے ۔ کے پی کے طرز پر پمز میں ہونے والی اصلاحات کو ہم نہیں مانتے اگر ایسا کچھ کرنے کی کوشش کی گئی تو پھر وفاقی دارالحکومت میں دمادم مست قلندر ہوگا ۔ دورہ

© Copyright 2018. All right Reserved