منگل‬‮   20   ‬‮نومبر‬‮   2018

قومی اسمبلی

56کمپنیوں کاسکینڈل سب سے بڑا،مرادسعید،گزشتہ حکومت نے ملک لوٹاصوبوں کاپانی چوری کیا ،فیصل واوڈا
پنجاب نے کسی کا پانی چوری نہیں کیاکمیٹی بنائی جائے،خاقان،حکومت جعلی مینڈیٹ سے آئی، ثناء اللہ

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) قومی اسمبلی میں چور چور کا شور سنائی دیا ۔ فیصل واوڈا نے وقفہ سوالات میں بتایا گزشتہ حکومت نے نہ صرف پورا ملک لوٹا بلکہ صوبوں کاپانی بھی چوری کیا گیا ۔جواب دیتے ہوئے شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ پنجاب نے کسی کا پانی چوری نہیں کیا ، کمیٹی بنا دی جائے، حقائق سامنے آ جائیں گے۔شاہد خاقان عباسی سے مخاطب ہوتے ہوئے پی ٹی آئی رہنما کا کہنا تھا کہ ن لیگ کے دور میں ہر چیز چوری ہوئی اور ڈاکہ ڈالا گیا ، اگر آپ غیر پارلیمانی کام کریں گے تو غیر پارلیمانی زبان بھی استعمال ہو گی اور آپ کے خلاف غیر پارلیمانی ایکشن بھی ہوں گےاور ہم کرکے دکھائیں گے آپ کو ، اب کسی چوری اور ڈاکے پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا۔ جواب میں شاہد خاقان عباسی نےاسمبلی فلور پر کھڑے ہو کر کہا کہ اگر مجھے چور کہیں گے تو میں آپ کو اور آپ کے والد کو چور کہوں گا جو ایک لفظ بولے گا دس لفظ سنے گا ، آپ ابھی کمیٹی بنائیں تاکہ عوام کو پتا چلے کہ الیکشن چوری کرنے والے آج اپنی چوری پر پردہ ڈالنے کیلئے ہر دوسرا لفظ چور کا استعمال کرتے ہیں۔فیصل واوڈا نے جواب دیا کہ یہ آپ کی پرورش ہوگی کہ آپ میرے والد کو چور کہیں گے مگر جواب میں میں ایسا کچھ نہیں کہوں گا میں شاہد خاقان عباسی کو یاد دلانا چاہتا ہوں کہ میں مجرم نہیں ہوں یا میں کٹہرے میں نہیں کھڑا ۔ نواز شریف صاحب، ان کی بیٹی، داماد اور سمدھی یا تو مفرور ہیں یا جیل میں ہیں۔
وفاقی وزیر برائے مواصلات مراد سعید نے کہا کہ ملک کو لوٹنے والوں کو ڈی چو ک میں لٹکایا جائیگا ، میری تربیت ایسی نہیں کہ گالی کا جواب گالی سے دوں۔ ،پنجاب کی 56کمپنیوں کا سکینڈل پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا سکینڈل بن چکا ہے ، شاہد خاقان جب وزیراعظم تھے تو ان کی ایئر لائن ترقی کررہی تھی اور پی آئی اے خسارے میں جارہا تھا یہ اختیارات کا غلط استعمال نہیں تو اور کیا ہے ۔
پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رانا ثناء اللہ نے کہا کہ اگر ہمیں چور چور کہا گیا تو ہم بھی یہودی لابی اور یہودی بچے کی بات کرینگے ،موجودہ حکومت جعلی مینڈیٹ کے ذریعے حکومتی سیٹوں پر بیٹھی ہے ، عمران خان نے کہا تھا کہ شہباز شریف کی طرف سے ان کو پانامہ لیکس کی طرف سے دس ارب کی آفر کی گئی تھی مگر جب شہباز شریف نے ان پر دعوی کیا تو وہ عدالت سے راہ فرار اختیارکرلی ، شہباز شریف کو گرفتارکرلیا گیا جبکہ سپیکر پنجاب اسمبلی پرویز الٰہی ، علیم خان ، پرویز خٹک کو گرفتار نہیں کیا گیا ۔ ان خیالات کا اظہار وفاقی وزیر اوررانا ثناء اللہ نے بدھ کے روز قومی اسمبلی میں اظہا ر خیال کرتے ہوئے کیا ۔ رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ دو ڈھائی ماہ سے ایک وزیر کھڑے ہوکر ملک کی معاشی اور دیگر اہم ایشو کے علاوہ دوسرے شور شرابے پر ٹائم دیتے ہیں اور نااہلی کامظاہرہ کیاجاتا ہے اگر کسی ثبوت کے الزامات لگائے جائیں تو چور چور کے مقابلے میں یہودی لابی اور یہودی بچے کی بات کرینگے اگر اس طرح سے رویہ رکھا گیا تو آپ کو جعلی مینڈیٹ کے ذریعے حکومتی سیٹوں پر بیٹھایا گیا ہے عمران خان نے خود الزام لگایا تھا کہ پانامہ لیکس میں شہباز شریف نے دس ارب روپے کی آفر کی تھی اگر میں نے اس بندے کا نام نہیں بتائوں گا میاں شہباز شریف نے اس پر دعویٰ کیا ہے کہ باربار عدالت کے بلانے کے باوجود پیش نہیں ہوئے ۔ ملتان میٹرو کے حوالے سے بھی الزام لگایا گیا اس کا بھی نوٹس دیا گیا اس کابھی جواب نہیں آیا انہوں نے کہا کہ یہ سمجھتے ہیں کہ یہ الزام لگاتے جائیں اور ہم سنتے جائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ریحام خان نے اپنی کتاب کا بھی حوالہ دیا ،ہم نے ان سے کہا کہ الزام نہ لگائیں اگر لگائیں گے تو ہم بھی لگائیں گے میاں شہباز شریف نے میثاق معیشت کا کہا اور شہباز شریف کو گرفتار کیا گیا سپیکر پنجاب اسمبلی علیم خان ، پرویز خٹک کو گرفتار نہیں کیا گیا اورصرف میاں شہباز شریف کو گرفتارکیا گیاہے صرف میٹرو کا ٹھیکہ منسوخ کرنے کی وجہ سے گرفتار کیا گیا اور ایک ماہ ایک عقوبت خانے میں رکھا گیا آج بھی شہباز شریف کہتے ہیں کہ ہمیں آگے بڑھنا چاہیے ۔ میاں نواز شریف کو سپریم کورٹ نے صرف تنخواہ نہ لینے پر نااہل کیا اور ریفرنس احتساب عدالت میں بھیج دیا گیا اور پھر عدالت نے کہا کہ ان پر کرپشن ثابت نہیں ہوئی ، ہائی کورٹ میں نیب کے پاس اس حوالے سے کوئی جواب نہیں تھا سپریم کورٹ کو سرٹیفکیٹ چوری قرار دیا اور وہ جہانگیر ترین جو جعلی لوگوں کو جہازوں میں بنی گالہ لاتا رہا ہے اور ان کو پٹہ ڈلواتا رہا ، خیبر پختونخوا میں احتساب بیورو نے کیوں استعفیٰ دیا ؟ انہوں نے کہا کہ وزیروں نے کرپشن کی ہے بلین ٹری میں کرپشن ہوئی پشاور میٹرو میں کرپشن کی اگرہم نے کرپشن کی کہانی اور یہودی ایجنڈے کی بات کی تو آپ کو ناگوار گزرے گی جو عمران خان نے الزامات لگائے ہیں وہ عدالت میں آ کر ثابت کریں وہ باہر جا کر کہتے ہیں کہ میرے ملک میں کرپشن ہے اس کے بعد کون ہمارے ملک میں سرمایہ کاری کرے گا اگر حکومتی اراکین نے رویہ تبدیل نہ کیا تو پھر ان کی کرپشن بھی سامنے آئی تھی جس نے ججوں کو واجب القتل اور آرمی چیف کیخلاف بغاوت کردیں اپوزیشن آگے بڑھنا چاہتی ہے اور ملک آگے بڑھے گا ۔
اس پر مراد سعید نے کہا کہ میری تربیت ایسی نہیں کہ گالی کا جواب گالی سے دوں ملتان میٹرو کے حوالے سے میں درخواست گزار ہوں میٹرو کے حوالے سے سوال کئے ہیں انہوں نے جواب نہیں دیا میں اپنی فائلیں لیکر آتا ہوں اور اسمبلی میں بھی دودھ کا دودھ پانی کا پانی ہوجائے گا چھپن کمپنیوں کا سیکنڈل پاکستان کا سب سے بڑا سیکنڈل بن چکا ہے پنجاب میں ان کے اپنے ممبر نے سترہ افراد کے قتل کا الزام لگایا ماڈل ٹائون کیس میں ان کا نام ہے ماڈل ٹائون میں عورتوں پر گولیاں چلائیں گئیں اس کاکوئی جواب ہے ان کے پاس زینب قتل کیس میں اس کے والد سے پریس کانفرنس کے دوران ان سے مائیک چھین رہے تھے انہوں نے کہا کہ جب ہم اپوزیشن میں تھے تو نون لیگ کے رہنما نے مجھے کہا کہ چھوٹو گینگ میں رانا ثناء اللہ کا نام بھی دے دیں کیونکہ وہ شامل ہیں ملک کو معاشی بحران قرضوں کی وجہ سے آیا ،سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے دور میں ان کی ائر لائن نے ترقی کی اور پی آئی اے خسارے میں گیا انہوں نے کہا کہ اختیار کا ٹکٹ استعمال نہیں کیا گیا ہم نے اس ملک سے کرپشن کا خاتمہ کرناہے اسمبلی کی کارروائی نیشنل ٹی وی پر لائیو چلتی ہے اب احتساب کا عمل شروع ہوگا ۔
قومی اسمبلی

© Copyright 2018. All right Reserved