بدھ‬‮   21   ‬‮نومبر‬‮   2018

پشاور یونیورسٹی کرپشن ، تحقیقاتی پارلیمانی کمیٹی نے ریکارڈ طلب کر لیا

دو کالم ضروری
پشاور یونیورسٹی کرپشن ، تحقیقاتی پارلیمانی کمیٹی نے ریکارڈ طلب کر لیا
غیر قانونی رہائش پذیر طلبا ،فیس سٹریکچر بارے معلومات فراہمی کی ہدایت
پشاور(بیورو رپورٹ)خیبرپختونخوا کے وزیر قانون سلطان محمد خان کی زیر صدارت پشاور یونیورسٹی کے ہاسٹلزمیں غیر قانونی طور پر رہائش پذیر طلباء اور دیگر بدعنوانیوں کے خلاف تحقیقاتی پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس میں اراکین صوبائی ا سمبلی سردارحسین بابک ،نگہت اورکزئی ، وائس چانسلر پشاور یونیورسٹی ، سیکرٹری ہائیر ایجوکیشن اور دیگر حکام نے شرکت کی۔ کمیٹی ممبران نے وائس چانسلر سے ہاسٹلز میں غیر قانونی رہائش پذیر طلباء کے بارے میں معلومات حاصل کیں جس کے بارے میں وائس چانسلر نے کمیٹی کو بتایا کہ یونیورسٹی میں تمام غیر قانونی رہائش پذیر طلباء سے ہاسٹل کو خالی کرالیا گیا ہے پارلیمانی کمیٹی ممبران نے وائس چانسلر سے ان تمام غیر قانونی رہائش پذیر طلباء کا ریکارڈ بھی مانگ لیا۔ کمیٹی ممبران نے وائس چانسلر سے فیس سٹریکچر کے بارے میں بھی معلومات حاصل کیں اور اس بارے میں تفصیلی رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی ۔اجلاس میں غیرمتعلقہ سکیورٹی اہلکاروں کی حوصلہ شکنی کی تجویزدی گئی وزیر قانون نے وائس چانسلر کو کمیٹی کے اگلے اجلاس تک تمام تفصیلات فراہم کرنے کی ہدایت کی ۔
پشاور یونیورسٹی

© Copyright 2018. All right Reserved